انسانی دوده کا انوکها کاروبار……امریکی کمپنی نے کمبوڈئین خواتین کے دوده کی خریدوفروخت شروع کردی..حکومت کی طرف سے ردِعمل…..

بنوم بنہ: امریکی کمپنی نے کمبوڈیا کی بچوں کو دودھ پلانے والی غریب خواتین سے ان کا دودھ خرید کر اسے امریکی مارکیٹmilk2 میں فروخت کرنا شروع کر دیا جس کے بعد کمبوڈین وزیر اعظم نے ماؤں کا دودھ فروخت کرنے کا نوٹس لیتے ہوئے کمپنی پر فوری طور پر پابندی لگانے کا حکم دے دیا ہے غیر ملکی خبر رساں اادارے کے مطابق امریکی کمپنی ’امبروزیا لابز‘ نے گذشتہ چند ہفتوں سے کمبوڈیا کی غریب ماؤں سے ان کا دودھ خریدنے کا سلسلہ شروع کر رکھا تھا۔ یہ کمپنی ماؤں کے دودھ کو فریز کرنے کے بعد اسے فی 147 ملی لیٹر کو 20 ڈالر کے عوض امریکا میں فروخت کر رہی تھی۔ کمبوڈین وزیر اعظم کی طرف سے جاری کردہ ایک مکتوب میں ماؤں کے دودھ کی خرید و فروخت اور اس کی برآمد روکنے کے لیے فوری اور موثر اقدامات کا حکم دیا گیا۔ وزیر اعظم کا کہنا ہے کہ اس میں کوئی شبہ نہیں کہ کمبوڈیا ایک غریب ملک ہے اور ہمیں معاشی مسائل کا بھی سامنا ہے مگر ایسا بھی نہیں کہ مائیں اپنا دودھ بیچنے پر مجبور ہو جائیں۔COLOMBIA-HUMAN MILK BANK واضح رہے کہ گذشتہ ایک ہفتے کے دوران کمبوڈین کسٹم حکام نے ماؤں کا دودھ بیرون ملک سے باہر بھیجنے کا عمل حکومتی فیصلے تک ملتوی کر دیا تھا دوسری جانب یونیسیف‘ نے غریب خواتین سے ان کا دودھ خریدنے کو انہیں بلیک میل کرنے کے مترادف قرار دیتے ہوئے اس مکروہ دھندے کی شدید مذمت کی ہے۔ دارہ برائے اطفال کی طرف سے کمبوڈین حکومت کے تازہ فیصلے کا خیر مقدم کیا گیا ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s