انوکها قانون… والدین بچوں کی فیس دینے کے قابل نہ ہوں تو وہ بھیڑ، بکری اور دیگر مویشی بھی دے سکتے ہیں۔وزیر تعلیم کی تجویز….

ہرارے(ویب ڈیسک) غیر ملکی میڈیا کے مطابق افریقی ملک زمبابوے کی حکومت نے ایک ایسا قانون پاس کیا ہے جس کے تحت اگر والدین بچوں کی فیس دینے کے قابل نہ ہوں تو وہ بھیڑ، بکری اور دیگر مویشی بھی سکولوں کو پیش کر سکتے ہیں۔ زمبابوے کے وزیر تعلیم کا کہنا ہے کہ ٹیوشن فیس وصول کرنے میں سکولوں کو والدین کے ساتھ نرمی برتنا چاہیے اور انھیں نہ صرف مویشی قبول کرنے چاہیں بلکہ اس کے بدلے میں ان سے خدمات بھی حاصل کی جا سکتی ہیں۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق زمبابوے میں پیسوں کا بحران پیدا ہونے کی وجہ سے عام طور پر لوگوں کو کیش کے لیے بینکوں کے باہر گھنٹوں قطاروں میں کھڑے رہنا پڑتا ہے

goat.jpg

۔ حکومت نے گزشتہ ہفتے پارلیمٹ میں ایک قانون منظور کیا تھا جس کے تحت بینکوں کے قرضوں کی واپسی بھیڑ، بکری اور دیگر مویشیوں کے ذریعے کرنے کی تجویز پیش کی گئی تھی۔ اس کے بعد سکول کی فیس ادا کرنے کے لیے بھی اس کی اجازت دی گئی۔ بعض سکولوں کی جانب سے فیس کے بدلے مویشی لینے پر اعتراض کیا جا رہا ہے۔

Advertisements

One thought on “انوکها قانون… والدین بچوں کی فیس دینے کے قابل نہ ہوں تو وہ بھیڑ، بکری اور دیگر مویشی بھی دے سکتے ہیں۔وزیر تعلیم کی تجویز….

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s