بیوی نے شوہر کوبتائے بغیر 6 بچے پیدا کر دیئے.اس نے بچے کیسے پیداکئے.شوہر عدالت پنہچ گیا….

ابوجہ (نیوز ڈیسک)نائیجیریا سے تعلق رکھنے والے ایک صاحب طلاق کی درخواست لے کر عدالت پہنچ گئے، اور اس انتہائی اقدام کی وجہ ایسی بیان کی کہ جج سمیت عدالت میں موجود ہر شخص حیرت کے سمندر میں غوطے کھانے لگا۔
ویب سائٹ WWWN کی رپورٹ کے مطابق اس شخص کا کہنا تھا کہ اس کی اہلیہ نے اس کی اجازت کے بغیر نصف درجن بچے پیدا کر دئیے ہیں، اور اتنے بچوں کے باوجود اس کا جی نہیں بھرا اور مزید بچوں کی ضد کر رہی ہے۔ لاگوس شہر کی عدالت کے سامنے پیش کی گئی درخواست میں 39 سالہ مائیکل اینڈی نامی اس شخص کا کہنا تھا کہ اس کی اہلیہ گلوری اس کی اجازت کے بغیر ایک بار پھر حاملہ ہوگئی ہے اور ابھی مزید بچے پیدا کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔ اس کا کہنا تھا کہ وہ بہت تنگ آچکا ہے اور بیوی کی ضد سے مجبور ہوکر اس کے ساتھ اپنے 9سالہ تعلق کو ختم کرنا چاہ رہا ہے۔

عدالت کے سامنے بیان دیتے ہوئے اینڈی کا کہنا تھا کہ اسے لگتا ہے کہ وہ مر جائے گا کیونکہ اس کے پاس اتنے زیادہ بچوں کی پرورش اور دیکھ بھال کیلئے وسائل نہیں ہیں۔ اس نے یہ الزام بھی لگایا کہ اس کی اہلیہ گھر کے کاموں اور کھانے پکانے میں بالکل دلچسپی نہیں رکھتی اور یہ کہ اپنے بچوں کا پیٹ پالنے کیلئے وہ پہلے ہی اپنی گاڑی اور جائیداد فروخت کرچکا تھا۔
اینڈی نے عدالت کو بتایا کہ شادی سے قبل اہلیہ کے ساتھ اس کا معاہدہ ہوا تھا کہ وہ دو سے زیادہ بچے پیدا نہیں کریں گے لیکن اس کی اہلیہ نے کمال چالاکی سے معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے چھ بچے پیدا کر دئیے۔ معاملے کی وضاحت کرتے ہوئے اس نے بتایا کہ دو بچوں کے بعد ہر بار اس کی اہلیہ نے بتایا کہ وہ فیملی پلاننگ پر عمل کررہی تھی لیکن ہر بار بعد میں پتہ چلا کہ اس نے جھوٹ بولا تھا۔ پریشان حال شوہر کی فریاد سنتے ہوئے عدالت نے اگلی سماعت پر اس کی اہلیہ کو طلب کرلیا ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s