کس غلیظ کام میں” 19 سالہ طالبہ نہ صرف مقابلہ میں اول آئ بلکہ پچهترہزارروپے بهی جیت لئے. جان کرآپ بهی کانوں کو ہاته لگائیں گے..

ڈیلی سٹار کی رپورٹ کے مطابق ویب سائٹ ویب بلائنڈز نے ایک مقابلے کا انعقاد کیا تھا جس کا مقصد برطانیہ میں ایسے طالب علم کا انتخاب کرنا تھا جس کا کمرہ سب سے گندہ ہو۔ یہ اشتہار برٹنی کے والد نے دیکھا تو سوچا کہ ان کی بیٹی کے کمرے سے زیادہ گندہ کمرہ کس کا ہوسکتا ہے، لہٰذا فوری طور پر ویب سائٹ کا لنک اپنی بیٹی کو بھیج دیا۔
برٹنی کہتی ہیں کہ ”شاید میرے والد نے یہ لنک مذاق کے طور پر بھیجا تھا لیکن یہ بات تو ٹھیک ہی تھی کہ میرا اور میری سہیلیوں کا کمرہ بہت گندہ رہتا تھا۔ ہم نے اپنے کمرے کی تصاویر مقابلے کیلئے بھیج دیں اور اس وقت ہماری حیرت کی انتہا نہ رہی جب واقعی ہم نے مقابلہ جیت لیا۔“

برٹنی کے کمرے کی حالت آپ بھی دیکھئے، اس میں اس قدر کچرا بھرا ہے گویا یہ کسی انسان کی رہائشگاہ نہیں بلکہ ایک بڑا سا کوڑا دان ہو۔ کوڑے کی ٹوکریوں سے ابلتا ہوا کچرا فرش پر، کرسیوں پر اور حتیٰ کہ بیڈ پر بھی پہنچ چکا ہے۔ کھانے پینے کی اشیاءکے ڈبے ہر جانب بکھرے پڑے ہیں جبکہ گندے برتنوں کے بھی انبار لگے ہیں۔ پکانے کے برتنوں کا تو کچھ حال ہی مت پوچھئے، یوں لگتا ہے کہ ان پر لگے داغ کبھی صاف نہ ہوسکیں گے۔

uk22برٹنی کو برطانیہ کی سب سے گندے گھر والی طالبہ کا سرٹیفکیٹ ہی نہیں ملا بلکہ 500پاﺅنڈ (تقریباً 75ہزار پاکستانی روپے) کا انعام بھی ملا ہے۔ انہوں نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ان کے والد کہہ رہے ہیں کہ یہ انعام ففٹی ففٹی ہوگا، لیکن ایسا نہیں ہونے والا ۔ برٹنی کا کہنا تھا کہ وہ انعامی رقم خود رکھیں گی اور کوشش کریں گی کہ اس سے اپنے فلیٹ کو اچھی طرح صاف کروا کے خوبصورتی سے اس کی تزئین و آرائش کریں تاکہ وہ دوبارہ کبھی اس مقابلے کی فاتح قرار نہ پائیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s