لیگی رہنماکواپنے ڈرائیورکی بیوی پسند آئی تواس نے کس طرح جال میں پھنسایا

لاہور: (نیوزڈیسک) رکن اسمبلی پی ایم ایل این سلمان حنیف کی جانب سے اپنے ڈرائیور کی بیوی کو تین ماہ سے مسلسل حبس بے جا میں رکھنے اور جنسی زیادتی کا لرزہ خیز انکشاف ہوا ہے۔ تفصیلات کے مطابق نجی نیوز چینل کے ایک پروگرام “کھرا سچ” میں انکشاف کرتے ہوئے ڈرائیور محمد عامر کا کہنا تھا کہ وہ چار بر س سے ایم این اے سلمان حنیف کی خدمت پر مامور تھا۔ اس دوران ایم این اے اس کی بیوی کو بری نظرسے دیکھنا شروع ہوگیا۔ جس پر اس نے ایم این اے کی ہاں ملازمت کو خیر باد کہا اور کسی اور جگہ نوکری کرنے لگا۔ اس کے بعد سلمان حنیف نے اس سے دوبارہ رابطہ کیا اور اسے سمجھایا کہ ایسا کچھ بھی نہیں ہے تم واپس آجائو۔

عامر کے واپس جانے پر اس نے ایک روز اسے اپنی گاڑی دی جس میں ایک جواں سالہ لڑکی بیٹھی ہوئی تھی۔ عامر کو اسے لیکر کلمہ چوک جانا تھا لیکن راستے پر اسے پولیس نے پکڑ لیا اور گاڑی کی تلاشی لینے پر ڈگی سے شراب بھی برآمد ہوئی۔ اس موقع پر پولیس نے اس کا رابطہ زبردستی اس کی بیوی سے کرا دیااور اسے بتایا کہ تمھارا شوہر لڑکی اور شراب سمیت پکڑا گیا ہے۔ جس پر میری بیوی ناراض ہو کر میکے چلی گئی۔ عامر نے مزید بتایا کہ ایم این اے نے مجھے تھانے آکر چھڑایا۔

میں بڑی مشکل سے اپنی بیوی کو سمجھا بجھا کر واپس گھر لایا۔لیکن اس کے بعد وہ میری بیوی کے نمبر پر فون کرنے لگا۔میرے اعتراض پر وہ مجھے دھمکانے لگا اور ایک روز میری غیر موجودگی میں میری بیوی اور بیٹی کو اٹھا لے گیا۔ مجھے شک اس بنا پر ہوا کہ مقامی چئیرمینوں اور پولیس نے مجھے بدنامی سے ڈرا کر میرا ساتھ دینے سے انکار کردیا۔ میں نے فون ریکارڈ چیک کرایا تو اس جرم کے سارے کھرے ایم این اے سلمان حنیف کے گھر ہی جاتے تھے۔ میں نے اسے کہا کہ میری بیوی اور بیٹی تمھارے قبضے میں ہیں تو وہ مجھے جان سے مارنے کی دھمکیاں دینے لگا۔ میری میڈیا سے اپیل ہے کہ میری بیوی اور بیٹی کو بازیاب کرایا جائے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s