”میں اپنی محبوبہ کو گھر سے لینے گیا تو اس کے ابو آ گئے اور میں ٹیکسی ڈرائیور بن گیا اور پھر۔۔۔“ عشق میں ڈوبے پاکستانی لڑکے نے اپنے ساتھ پیش آنے والا مزاحیہ ترین واقعہ سنا دیا، نتیجہ ایسا نکلا کہ جان کر آپ ہنسی نہ روک پائیں گے

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) عشق کرنا بہت ہی مشکل کام ہے جس دوران بہت سے ”ڈرامے“ بھی ہوتے ہیں اور ناز نخرے بھی اٹھانے پڑتے ہیں مگر کئی مرتبہ کچھ ایسے لمحات بھی آ جاتے ہیں کہ جن کے بارے میں انسان کے وہم و گمان میں بھی نہیں ہوتا۔

کسی لڑکے اور لڑکی کے درمیان تعلق کے باعث سب سے زیادہ مشکل لڑکی کو اٹھانا پڑتی ہے اور وہ ہوتی ہے والدین کو راضی کرنے کی مشکل، اگرچہ بیٹیوں کی حفاظت کے معاملے میں باپ ہر طرح کے اقدامات اٹھاتا ہے اور یہی وجہ ہے کہ سخت باپ کا ڈر بہت سوں کی ’بولتی‘ بند کر دیتا ہے۔
ایسا ہی ایک واقعہ پاکستانی لڑکے احد نے بھی سنایا جو اپنی محبوبہ کو لینے اس کے گھر گیا تو اس کی بجائے اس کے ”ابو“ باہر آ گئے اور پھر وہ کچھ ہو گیا جسے جان کر آپ کیلئے اپنی ہنسی روکنا مشکل ہو جائے گا۔ احد نے اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعے کی تمام تر تفصیل ٹوئٹر پر جاری کی تو ہنسی کا طوفان آ گیا اور اس کی کہانی تیزی سے وائرل ہو رہی ہے۔

احمد نے بتایا کہ ”میں اپنی محبوبہ کو لینے کیلئے اس کے گھر گیا، جب میں اس کی گلی میں داخل ہو رہا تھا تو اسے ایس ایم اس کیا کہ ’میں باہر ہوں‘۔ 2 سے 3 منٹ بعد اس کا جواب آیا کہ ’ابو آ گئے ہیں‘۔“

احمد نے کہانی کا اگلا حصہ بتاتے ہوئے لکھا کہ ”محبوبہ نے جواب دیا کہ تم گلی سے باہر نکلو، میں نے ویسا ہی کیا، کچھ منٹوں کے بعد اس نے مجھے فون کیا اور کہا کہ میں نے ابو کو بتایا ہے کہ دوست کی طرف جا رہی ہوں۔“

احمد نے بتایا کہ ”جب وہ اپنے ’ابو‘ کے ساتھ باہر آئی تو اس کے والد نے گاڑی کا دروازہ کھولا اور کچھ بھی بولے بغیر گاڑی کا جائزہ لینا شروع کر دیا۔“

احد کے مطابق ”انہوں نے مجھ سے پوچھا کہ کون سا ماڈل ہے، میں نے جواب دیا سر 2013ئ، انہوں نے پوچھا اپلائیڈ فار کیوں ہے؟ میں نے کہا کہ سر ایک ہفتے پہلے خریدی ہے۔ پھر انہوں نے پوچھا کہ کتنے کما لیتے ہوں تو میں نے بتایا کہ سر 90 ہزار روپے ماہانہ کما لیتا ہوں۔“

احد کا کہنا تھا کہ ”انہوں نے سوال کیا کہ اگر گاڑی ایک ہفتے پہلے لی ہے تو پھر 90 ہزار کیسے کما لیا، میں نے کہا کہ سر ایک گاڑی پہلے بھی چل رہی ہے میری، انہوں نے اگلا سوال پوچھا کہ پہلے کیا کرتے تھے۔“
احد نے لکھا ” سر میں ایونٹ پلاننگ کی کمپنی ہے میری۔ انہوں نے پوچھا کہ تو پھر کیوں ٹیکسی چلا رہے ہو؟ میں نے کہا کہ سر ویسے ہی۔ انہوں نے پوچھا کہ اگر میں گاڑی لگاﺅں تو 90 ہزار ملیں گے؟“
احد کے مطابق اس نے جواب دیا کہ ”سر یہ آپ کی محنت پر منحصر ہے۔ انہوں نے کہا میں کام چور لگتا ہوں تمہیں؟ میں نے کہا کہ نہیں سر، میرا یہ مطلب نہیں ہے۔“
احمد نے واقعے کا آخری حصہ بیان کرتے ہوئے لکھا کہ ”انہوں نے پوچھا کریم کا آفس کدھر ہے؟ میں نے انہیں پتہ دیا تو وہ مسکرائے اور کہا کہ مذاق کر رہا ہوں برا نہ منانا، اللہ حافظ۔۔۔“
Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s