بیوی کو کتوں کے ساتھ جنسی عمل کرنے والے مرد کو ایسی سزا کہ سن کر آپ بھی کانوں کو ہاتھ لگائیں گے

لندن (نیوز ڈیسک) اہل مغرب کی جنسی بے راہروی کے بارے میں آپ نے بہت سنا ہوگا لیکن برطانیہ میں پیش آنے والے ایک واقعے کے شرمناک حقائق جان کر آپ واقعی کانپ اٹھیں گے۔ آپ کے ذہن میں یہ سوال بھی ضرور آئے گا کہ آخر ان کی بے راہروی انہیں ذلت کی کن گہرائیو ں تک لے کر جائے گی۔
دی میٹرو کی رپورٹ کے مطابق برطانیہ کی ایک عدالت میں پیش کئے جانے والے مقدمے میں انکشاف ہوا ہے کہ ڈیوڈ گیلووے نامی شخص اور اس کی اہلیہ کیرل بوڈچ ایسی جنسی پارٹیوں میں شریک ہوتے تھے جو کوئی عام جنسی پارٹیاں ہرگز نہیں ہوتی تھیں۔ دراصل ان لوگوں نے ایک خاص گروپ بنارکھا تھا جس میں شامل افراد اپنی جنسی پارٹیوں میں انسانو ں کے ساتھ جانوروں کو بھی شامل کرتے تھے۔

PAY-JS116629572

عدالت کو بتایا گیا کہ 65 سالہ ڈیوڈ گیلووے اپنی اہلیہ کیرل کو ان پارٹیوں میں لے کر جاتا تھا اور سب مہمانوں کے سامنے اسے کتوں کے ساتھ بدفعلی کرنے کو کہتا تھا۔ اس نے گزشتہ کئی سال کے دوران لاتعداد پارٹیوں میں اپنی اہلیہ سے یہ کام کروایا۔ وہ عام طور پر کتوں کے ساتھ بدفعلی کیلئے اپنی اہلیہ کی مدد بھی کرتا تھا۔ ان مکروہ پارٹیوں میں شامل ہونے والے مرد خصوصی طور پر اپنے ساتھ اپنے پالتو کتے لایا کرتے تھے جن کے ساتھ پارٹی میں شریک خواتین بدفعلی کرتی تھیں۔
گیلو وے کے پاس 1911 تصاویر بھی برآمد ہوئیں جن میں اس کی اہلیہ کتوں کے ساتھ بدفعلی کرتی نظر آتی ہے۔ یہ تصاویر اس نے مختلف پارٹیوں میں بنائی تھیں۔ اس کے پاس 12ہزار سے زائد بچوں کی قابل اعتراض تصاویر بھی برآمد ہوئیں۔ یہ انکشافات پہلی بار اس وقت سامنے آئے جب برطانوی ملٹری پولیس لنکن شائر میں ائیرفورس کے ایک اہلکار کے بارے میں تحقیقات کررہی تھی۔
پولیس کو پتہ چلا کہ مکروہ جنسی پارٹیوں میں شامل ہونے والے افراد بعدازاں ان پارٹیوں کی تفصیلات مختلف انٹرنیٹ فورمز پر بھی پوسٹ کرتے تھے۔ پولیس نے جب بوڈوچ کے گھر پر چھاپہ مارا تو وہاں سے ایک ڈی وی ڈی اور یو ایس بی ملی جس میں اس کی کتوں کے ساتھ بدفعلی کی فلمیں تھیں۔
گیلووے نے اعتراف کیا کہ وہ اپنی اہلیہ کو جنسی پارٹیوں میں لے کر جاتا تھا اور اس سے کتوں اور دیگر مردوں کے ساتھ بدفعلی کرواتا تھا۔ بوڈوچ نے بھی اعتراف کیا کہ وہ گزشتہ کئی سال سے اس طرح کی پارٹیوں میں شریک ہورہی تھی البتہ اس کا کہنا تھا کہ اسے یہ معلوم نہیں تھا کہ جانوروں کے ساتھ جنسی فعل غیر قانونی عمل ہے۔
عدالت نے خاتون کو ایک سال کی کمیونٹی سروس کا حکم دیا ہے، جبکہ گیلووے کو بچوں کی 12332 قابل اعتراض تصاویر بنانے اور جانوروں کے ساتھ بدفعلی کی 191 تصاویر اور ویڈیوز بنانے کا مجرم قرار دیا گیا۔ اسے ایک سال قید اور 10 سال تک جنسی مجرموں کے رجسٹر پر باقاعدگی سے دستخط کرنے کی سزا سنائی گئی ہے۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s