مجهے چهوٹی عمرمیں دو پادریوں نے درندگی کا نشانہ بنایا،میں حاملہ ہو گئی اور ۱۰سال کی عمر میں پہلی بیٹی کو جنم دیا، میں اب تک ۹بچوں کو جنم دے چکی ہوں۔ تب سے بچے پال رہی ہوں جب میں خود ایک بچی تھی۔ معاملہ عدالت پہنچ گیا،

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) کم عمری کی شادی اور لڑکی کو جنسی زیادتی کا شکار بنانے والے مجرم سے ہی اس کی شادی کرنے جیسے مکروہ جرائم کاخیال آئے تو ذہن میں تیسری دنیا کے ممالک آتے ہیں لیکن آپ یہ جان کر ششدر رہ جائیں گے کہ امریکہ جیسے نام نہاد مہذب اور ترقی یافتہ ملک میں بھی یہ کام عروج پر ہیں۔ شیری جانسن نامی لڑکی بھی انہی لڑکیوں میں سے ایک ہے جس کو زبردستی اسی شخص کے ساتھ بیاہ دیا گیا جس نے اسے انتہائی کم عمری میں زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا تھا۔ دی میٹرو کی رپورٹ کے مطابق شیری جانسن امریکی ریاست فلوریڈا کی رہائشی ہے جہاں کم عمری کی شادی تاحال قانوناً جائز ہے۔ شیری کو ایک سینئر اور ایک جونئیر پادری نے درندگی کا نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں وہ حاملہ ہو گئی اور 10سال کی عمر میں پہلی بیٹی کو جنم دے دیا۔ 11سال کی عمر میں اس کی شادی زبردستی انہی میں سے ایک مجرم کے ساتھ کر دی گئی۔

gettyimages-159237292.jpg

اب شیری نے عدالت میں مقدمہ دائر کر رکھا ہے اور امریکہ میں کم عمری کی شادیوں پر پابندی کا مطالبہ کیا ہے۔ اس نے عدالت میں بتایا کہ ”میں ہی نہیں، میری جیسی اور بھی کئی لڑکیاں ہیں جن کی شادی انہیں جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والے مجرموں سے زبردستی کی گئیں۔ ان میں سے اکثر کی عمریں 15سال سے کم تھیں جبکہ انہیں زیادتی کا نشانہ بنانے والے ان سے کہیں بڑی عمر کے تھے۔چرچ کے عمائدین جنسی زیادتی کے کیس چھپانے اور تحقیقات رکوانے کے لیے لڑکیوں کو انہی مردوں سے شادی پر مجبور کر دیتے ہیں۔ میں اب تک 9بچوں کو جنم دے چکی ہوں۔ میں تب سے بچے پال رہی ہوں جب میں خود ایک بچی تھی۔ اسی وجہ سے سکول تک نہ جا سکی۔ میری اس وقت زبردستی شادی کر دی گئی جب مجھے معلوم بھی نہیں تھا کہ شادی کیا ہوتی ہے۔“

واضح رہے کہ امریکی آدھی سے زیادہ ریاستوں میں شادی کی کم از کم عمر کا کوئی تعین نہیں کیا گیا جہاں کسی بھی عمر میں بچوں کی شادی کی جا سکتی ہے۔2000ءسے 2010ءکے دوران صرف ریاست ٹیکساس میں 34ہزار 793کم عمر بچوں کی شادیاں کی گئیں۔ فلوریڈا میں یہ تعداد14ہزار 278تھی۔ اس عرصے میں امریکہ بھر میں 1لاکھ 67ہزار 233کم عمر بچوں کی شادیاں کی گئیں۔

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s