عمران خان اور سیتا وائٹ کی مکمل کہانی پڑھئے .قسط نمبر1

یہ فیچر دینا کے معروف میگزین “وینٹی فیئر، نیویارکِ میں شائع ہوا ہےجس کی صداقت کے بارے میں اتنا ہی کہنا کافی ہے کہ آج تک عمران خان نے اس کے خلاف کوئی ایکشن نہیں لیا-دلچسپ امر یہ ہے کہ سنا ہے جمائما بھی آج کل اسی میگزین کے ساتھ وابستہ ہیں- سیتا وائٹ اور عمران خان کی یہ مکمل سٹوری اسی میگزین سے ترجمہ کی گئی ہے ، قارئین کے لیے پیش خدمت ہے- ہماری کوشش ہے کہ آپ کو روز اس کی ایک قسط پڑھنے کو مل سکے- شکریہ (ادارہ دنیا پاکستان) بشکریہ وینیٹی فیئر میگزین -نیویارک


وکی وارڈز کی تحقیق کے مطابق، جب برطانیہ کے مرحو م صنعتکارلارڈ گورڈن وائٹ کی تینتالیس سالہ بیٹی، سیتا وائٹ یکم مئی کو سانتا مونیکا میں اپنی یوگا کلاس کے دوران فوت ہوئی، اس کی زندگی مکمل طور پر بکھری ہوئی تھی۔ اس کا سبب کچھ تواس کے زیر استعمال ادویات اور اس کے مشکوک اور بد اخلاق مالی مشیران تھے اور کچھ پاکستانی سیاستدان عمران خان (وہی عمران کان جن کی اب گولڈ سمتھ کی وارثہ جمیما اور پھر ریحام سے طلاق ہو چکی ہے)سے ہونے والی اس کی بچی تھی۔ پھر وہ تلخ لڑائی بھی تھی جو اس کے باپ کی دولت کے بڑے حصے کے معاملے پر اس کی اپنے سوتیلے بھائی اور حیرت انگیز حد تک نوجوان سوتیلی ماں کے ساتھ چل رہی تھی۔

Image result for story of sita white and imranاس کہانی کا آغاز کچھ یو ں ہوا کہ عمران اور جمیما کی شادی 1996ء میں لندن میں ہوئی جبکہ سیت وائٹ اپنی بیٹی ٹیرن کے ساتھ1995ء میں منظر پر آئی تھی۔ اپنی وفات سے ذرا پہلے سیتا نے خان کو ایک خط لکھا جس میں اس نے ۱یک کروڑ امریکی ڈالر کا مطالبہ کیا۔لیکن عمران نے اس کو یہ رقم نہ بھیجی۔
اتوار کے روز، 24مئی کی ایک شاندار گرم سہ پہرکو لاس اینجلس کے سینٹ مونیکا کیتھولک چرچ میں سیتا وائٹ کی آخری رسومات ادا کی گئیں۔ سیتا، عظیم صنعتی گروپ ہینسن پی ایل سی کی امریکی شاخ کے سربراہ لارڈ گورڈن وائٹ مرحوم کی 43سالہ بیٹی تھیں۔ 13مئی کی صبح، سیتا، سانتا مونیکا میں مرکزی شاہراہ پر واقع یوگا ورکس سٹوڈیو میں 9:15پر شروع ہونے والی کلاس سے ذرا پہلے فوت ہو گئیں۔وہ وہاں اپنی سوتیلی ماں وکٹوریہ وائٹ او گاراکے ہمراہ آئی تھیں جو کہ حیرت انگیز حد تک سیاہ بالوں والی 41سالہ خاتون اور سابق ماڈل تھیں۔

چرچ سروس میں 40یا اس سے کچھ زیادہ تعزیت کرنے والے تھے مگر ان میں سے کوئی بھی مرنے والی کارشتے دار نہ تھا۔ نہ سیتا کی ماں ، بہن اور سوتیلا بھائی اس کی آخری رسومات میں شریک ہوئے اور حتیٰ کہ نہ ہی اس کی بیٹی اور اس کی سوتیلی ماں شریک ہوئیں۔ تابوت اٹھانے والوں کی قیادت، ایک پرجوش اور خوبصورت، ارجنٹینی نژاد 41سالہ ویٹرجوہن ارسِک کر رہا تھا جس نے جون 2002ء میں سیتا سے شادی کر لی تھی، لیکن اس کی وفات کے وقت، وہ اسے طلاق دے رہا تھا۔ سیتا نے قانونی کاغذات میں دعویٰ کیا تھا کہ جوہن اس کو جسمانی اور نفسیاتی طور پر تکلیف پہنچاتا تھا(تاہم جوہن اس الزام کو تسلیم کرنے سے انکارکرتاہے)۔
سیتا کی الوداعی رسومات سے دو راتیں قبل، لندن کے سرمایہ دارنکولس کیمی لیری، برطانیہ کے سابق ریس کار ڈرائیوررروپرٹ کی گان، سابق ماڈل لنگ ہزبروک اور ریئل اسٹیٹ کے سرمایہ دار علی وِنسٹن بھی بیورلے ہِلز میں مسٹر کوو کے یہاں بیٹھے شیمپئن پی رہے تھے۔ وہ پریشان تھے۔سیتا کے دوستوں میں سے ایک نے پیچیدہ الوداعی رسومات کے خاکے پر مبنی ایک خط کا حوالہ دیتے ہوئے پوچھا، ’’کون آ رہا ہے؟‘‘ مگر کوئی بھی جواب نہ دے سکا۔
یہ سوال انتہائی گلابی چہرے والے 44سالہ کیمی لیری نے اٹھایا، جس کا اس موقع پر لہجہ حیرت انگیز حد تک تلخ تھا۔ کیمی لیری اس بات پر بر ا بھلا کہہ رہا تھا کہ سیتا کی 48سالہ بہن کیرولینا نے اس صبح دوستوں اور اہل خاندان کو یہ کہنے کیلئے بلایا تھا کہ وہ نہیں جا رہی تھی۔

Related image

دراصل، یہاں تک کہ وہ سیتا کی آخری رسومات رکوانے کیلئے عدالت بھی گئی تھی مگر کامیاب نہ ہوئی۔ ایک متبادل کے طورپر، کیرولینانے بیورلے ہِلز میں کو ل ڈی سیک کے اختتام پر ایک پہاڑ کی چوٹی پر سیتا کے 2ملین ڈالر کے خوبصورت گھر میں4بجے، اپنی جانب سے سیتا کیلئے کی روح کیلئے ایک دعائیہ سروس کا اہتمام بھی کیا تھا۔کیمی لیری کا کئی سالوں سے کیرولینا کے ساتھ ایک طوفانی رشتہ رہا تھا، اور وہ اس قدر نارض تھا کہ بلآخر اس نے محسوس کیا کہ اس نے مرنے والی کے متعلق کچھ زیادہ اچھا نہیں کہا تھا، اس نے بعد میں اپنے رویے پر ندامت کا اظہار کیا۔ اس نے کہا، ’’میں کہنا چاہتا تھا کہ وہ کس قدر فیاض تھی۔‘‘لیکن اسے یقین تھا کہ اس نے اپنی موت سے متعلق افراتفری کا کافی لطف اٹھایا ہو گا: ’’وہ ایک ڈرامہ کوئین تھی!‘‘
قابل تمسخر بات یہ ہے کہ سیتا کی موت نے اسے وہ توجہ دلا دی جس کیلئے وہ اپنی زندگی میں ترستی رہی اور محروم رہی۔۔۔ نہ صرف یہ کہ اسے اپنے اس باپ کی جانب سے توجہ نہ ملی، جو اعلانیہ اپنی دونوں بیٹیوں سے متعلق مایوسی کا اظہار کرتا تھا بلکہ اپنے سابق چاہنے والے، سابق پاکستانی کرکٹ سٹار عمران خان کی طرف سے بھی اسے کوئی توجہ نہ ملی، الٹا اس نے اپنی اور سیتا کی بیٹی، ٹیرن کو بھی سر عام تسلیم کرنے سے انکار کر دیا۔ ٹیرن اب 12برس کی ہو چکی ہے۔سیتا وائٹ کا قد 6فٹ تھا اور وہ ایک دلکش خاتون تھی۔ اس کے بال سنہری تھے۔اس کی آنکھیں بڑی بڑی اور نیل گوں تھیں اور جسامت دُبلی پتلی تھی، جسے اس نے عمر بھر برقرار رکھا۔

حالیہ برسوں میں، تیززندگی، نشہ آورادویات، کاسمیٹک سرجریز اور طویل بھوک نے سیتا کو کافی نقصان پہنچایا ہے لیکن اپنی نوجوانی کے آخری ایام میں، اسے حسن کا ایک استعارہ سمجھا جاتا تھا۔ ۔۔شاید اس قدر حیرت زدہ کر دینے والا تونہیں جتنی کہ اس کی بڑی بہن کیرولینا تھی، جو ماڈلنگ بھی کرتی تھی، لیکن اس کے باوجود، سیتا بہرحال بے حد حسین تھی۔وہ ایک باتونی اور جذباتی روح کی حامل تھی۔ اسے ہنسنا بے حد پسند تھا اور اس کا قہقہہ چھوت کی بیماری کی طرح ہوتا،یعنی جب وہ ہنستی تو سب کا ہنسنے کو جی چاہتا۔ وہ ایک پر جوش زندگی کی خواہشمند تھی۔ یہ خواہش اس کے جینز میں شامل تھی۔ایک موقع پر ،وہ ایک فورڈ اکونووان کار چلایا کرتی تھی، جس کے اندرونی حصے کو ان نے ایک ذاتی جہاز کی طرح مزین کر رکھا تھا۔اپنی وفات سے ذرا پہلے، وہ ہمر گاڑی چلایا کرتا تھی۔ اس سے چھوٹی گاڑی اس نے کبھی نہیں چلائی ہو گی۔
آخری رسومات کے بعد، سیتا کی لاش کو نہ تو دفنایا گیا نہ ہی جلایا گیابلکہ اسے مردہ خانے میں رکھ دیا گیا، جہاں وہ پوسٹ مارٹم کی رپورٹ آنے تک برف پر پڑی رہی کیونکہ لاس اینجلس پولیس نے تاحال اس کی موت کی وجوہات کی انکوائری کو غیرضروری قرار نہیں دیا تھا۔ صرف دو ماہ بعد، محتاط تفتیش کے بعد، یہ نتیجہ نکالا گیا کہ وہ طبی موت مری ہے بالخصوص پھیپھڑوں کو خون فراہم کرنے والی نالیوں کے بند ہو جانے کے سبب۔پھیپھڑوں کو خون فراہم کرنے والی نالیوں کا بند ہونا ممکنہ طور پر ایک بمشکل شناخت کئے جا سکنے والے سارکوماکا نتیجہ تھا۔ سارکوما ایک ایسا کینسر ہوتا ہے جو جسم کی ملائم بافتوں میں نشوونما پاتا ہے۔ حیرت انگیز حد تک، شاید، سیتا کی کہانی کو دیکھیں تو بظاہر نشہ آور ادویات کے اثرات کہیں نظر نہیں آتے۔

Image result for sita white picsبہرحال، سیتا اور وکٹوریہ وائٹ او گارا، یوگا کی کلاسز میں اکٹھی تھیں جو بہت سے لوگوں کو کوئی بہت اہم بات لگی۔یہی وجہ ہے کہ اس بات کو قانونی دستاویزات میں بھی ریکارڈ کیا گیا۔۔۔ اور سیتا کے دوست بھی یہ کہتے ہیں کہ۔۔۔ سیتا اپنی سوتیلی ماں وکٹوریہ کو ناپسند کرتی تھی۔
وکٹوریہ نے خود سے چالیس سال بڑے لارڈ وائٹ سے شادی کی جواس کے بعد صرف تین برس تک زندہ رہا اور 1995ء میں 72سال کی عمر میں فوت ہو گیا۔ ایک شخص کا وکٹوریہ کے متعلق کہنا ہے کہ’’ وہ دیکھنے میں اپنے وقت کی ٹاپ ماڈل سٹیفین سیمور جیسی نہیں بلکہ اس سے بھی پانچ گنا زیادہ دلکش اور حسین معلوم ہوتی ہے۔‘‘ سیتا محسوس کرتی تھی کہ وکٹوریہ نے اس کا، اس کی بہن کیرولینا کا اور ان کے سوتیلے بھائی لوکاس کا باپ کی جائیداد میں موجود ایک بڑا حصہ چھین لیاتھا۔سیتا کے اندازے کے مطابق، یہ چھن جانے والا حصہ تقریباً 400ملین ڈ الر کی زمین پر مشتمل ہے۔ لوکاس کے ترجمان کے مطابق، سیتا کے ان دونوں الزامات اوراندازے کو احتیاط اور تصدیق طلب سمجھناچاہئے۔

Advertisements

3 thoughts on “عمران خان اور سیتا وائٹ کی مکمل کہانی پڑھئے .قسط نمبر1

  1. Pingback: عمران ، سیتا وائٹ اور ٹیریان کی مکمل کہانی .قسط نمبر3 |

  2. Pingback: عمران ، سیتا وائٹ اور ٹیریان کی مکمل کہانی .قسط نمبر2 |

  3. Pingback: عمران ، سیتا وائٹ اور ٹیریان کی مکمل کہانی .قسط نمبر4 |

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s