اب میں نے اپنی چمڑی موٹی کر لی ہے، وزرا کو بھی ٹینشن فری فارمولا بتا دیا ہے، عمران خان

اکستان کے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ان کی حکومت کو شدید تنقید کا سامنا ہے مگر اب انہوں نے اپنی چمڑی موٹی کر لی ہے اور پروا نہیں کرتے۔

سوئٹزر لینڈ کے شہر ڈیووس میں عالمی بزنس فورم اجلاس کے موقع پر ناشتے کی ایک تقریب میں خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ان کے سیاسی سفر کے دوران بھی انھیں بڑے طنز کا سامنا رہا۔ تاہم انھوں نے مشکل صورتحال کا اعتراف کرتے ہوئے یہ انکشاف بھی کیا کہ وہ کرکٹ کے دنوں کی طرح اپنے وزرا کو بھی یہی فارمولا بتاتے ہیں کہ جب مشکل ہو تو پھر نہ اخبار پڑھیں اور نہ شام کو ٹی وی پر ٹاک شوز دیکھیں۔

okkkkkkkl

(سوئٹزرلینڈ کے شہر ڈیووس میں ناشتے کی ایک تقریب سے عمران خان نے اپنی زندگی کے نشیب و فراز پر تفصیل سے بات کرتے ہوئے)

تقریبا پچاس منٹ تک جاری رہنے والی گفتگو کے اس سیشن میں پاکستان کے وزیراعظم خود ہی بولتے رہے اور میزبان کو زیادہ سوالات نہیں کرنے پڑے۔

پاکستان کے وزیراعظم نے سی این بی سی ٹی وی کو انٹرویو بھی دیا۔

عمران خان نے حکومت پر تنقید کے پس منظر میں کہا کہ انھوں نے بس اپنی چمڑی مزید موٹی کرلی ہے۔ ان کے بقول وہ 40 سال سے عوام کی نظروں میں ہیں اور تنقید کا بھی سامنا کرتے آئے ہیں۔

پاکستان کے وزیراعظم نے کہا کہ بہت اہلیت والے لوگ موجود ہوتے ہیں لیکن سہل پسندی تباہ کن ہوتی ہے۔ عمران خان کے مطابق ان کو کیریئر کے ابتدا میں ٹیم سے ڈراپ ہونے کی وجہ سے بہت طنز کا سامنا رہا لیکن انھوں نے جدوجہد جاری رکھی۔

عمران خان نے شرکا کو تفصیل سے اپنے فلاحی منصوبوں اور پھر سیاسی کریئر سے متعلق بتایا۔ ان کی گفتگو کے اختتام پر بعض حاضرین نے ان سے سوالات بھی کیے۔

پاکستانی وزیراعظم نے چندے سے بنائے اپنے شوکت خانم کینسر ہسپتال اور میانوالی میں نمل کالج کا بھی ذکر کیا جس کا الحاق برطانیہ کی بریڈ فورڈ یونیورسٹی سے ہے اور وہاں 80 فیصد طلبا اردو میڈیم سکول سے آتے ہیں۔

ان کے اس فارمولے پر شرکا ہنس پڑے تو انھوں نے کہا کہ وہ سنہ 1960 کی دہائی میں بڑے ہوئے جب دنیا کی نظر میں معاشی ترقی کرنے والے پاکستان کی بڑی قدر تھی۔ ان کے مطابق جب ایوب خان امریکہ گئے تو خود امریکی صدر استقبال کے لیے ایئرپورٹ گئے۔

عمران خان نے اپنے علاوہ سابق پاکستانی حکومتوں اور وزرائے اعظم کو کرپٹ اور ’ریلو کٹے‘ قرار دیا۔

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google photo

You are commenting using your Google account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s